Articles and Posts in UrduIslamic Posts and ArticlesPosts and Articles

Four Islamic Stories About Adultery is a debt | سبق آموز واقعات زنا ایک قرض ہے

Zina karnay say pehly yaad rakhain kay ye aik qarz hai.

Read four islamic story about Adultery. English and Urdu articles about how to prevent zina. The best stories collection with morals and lessons. Islamic posts for young people to learn. زنا سے متعلق سبق آموز واقعات پڑھیں اور عبرت حاصل کریں


Read Article in English OR تحریر اردو میں پڑھیں


4 best islamic stories in urdu | اردو اسلامی واقعات

Islamic Story in Urdu #1 | ۱  اسلامی واقع نمبر

قصاص زنا کا بدلہ زنا

ایک قصہ تفسیر روح البیان میں منقول ہے کہ شہر بخارا میں کسی سنہارشخص کی مشہور دکان تھی ۔ جس کی بیوی نہایت ہی نیک سیرت و خوبصورت تھی ۔ ایک سقاء (یعنی پانی لانے والا) اس کے گھر تیس سال سے پانی لا کر دےرہا تھا۔ جو کہ بہت بااعتماد شخص  بھی تھا۔

ایک دن سقاء نے پانی بھرتےوقت شہوت سے سنہار کی بیوی کا ہاتھ پکڑ کر دبایا اور چلاگیا ۔ سنہار کی بیوی بے حد غمزدہ ہوئی کیونکہ اتنی مدت کے اعتماد کو ٹھیس پہنچی تھی۔ اس کی آنکھوں سے آنسو جاری ہونےلگے۔  اسی دوران سنہار گھر آیا کهانا کهانے کے لئے تو اپنی بیوی کو روتے ہوئے دیکھا ،پوچھنے پر جب بیوی نےصورتحال سے آگاہ کیا تو سنہار کی آنکھوں میں آنسو آگئے۔

بیوی کے پوچھنےپر سنہار بولاکہ آج  دوکان پر ایک عورت زیور خریدنے آئی تھی۔ جیسے ہی میں زیور اسے دینے لگا ، تو اس کا خوبصورت ہاتھ مجھے بہت پسند آیا ۔ تو میں نے اس نا محرم کے ہاتھ کو شہوت سےدبایا جو کہ  میرے اوپر قرض ہو گیا ۔ لہٰذا سقاء نے تمہارے ہاتھ کو دباکر وہ قرض چکادیا ۔میں اب تمہارے سامنے سچی توبہ کرتا ہوں۔

کہ آئندہ ایسا کبھی نہیں کروں گا، تاہم مجھے  یہ ضرور بتانا کہ سقاء  تمہارے ساتھ اب کیا معاملہ کرتا ہے؟

دوسرے دن جب سقاء پانی لے کے آیا تو اس نے سنہار کی بیوی سے کہا کہ میں بے حد شرمندہ ہوں ۔کل میں شیطان کے بہکاوےمیں آکر براکام کر گیا۔ میں نے سچی توبہ کی ہے اور میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ ایسا آئندہ کبھی نہیں کرونگا۔

عجیب بات ہے نہ کہ جونہی سنہار نے نا محرم کو چھونے سے توبہ کر لی۔ تب ہی  غیر مرد نے بھی اس کی بیوی کو ہاتھ لگا نے سے توبہ کر لی۔

سنہار نے تو صرف نا محرم عورت کا ہاتھ ہی پکڑا تھا تو اللہ تعالیٰ نے فو ر ا ً اس سےحساب لے لیا ۔ دیکھا یہ ہے اللہ تعالیٰ عزوجل کا مکافات عمل کاقانون۔  مطلب جیسی کرنی ویسی بھرنی بر حق اللہ اکبر۔

(تفسیر روح البیان)


Islamic Story in Urdu #2 | ۲  اسلامی واقع نمبر

زنا ایک قصاص والا عمل ہے ،جس کا بدلہ ہر حال میں اداہوکر ہی  رہتا ہے۔

ایک دفعہ کا ذکر ہےکہ کسی عالم بادشاہ کے سامنے نے یہ مسئلہ بیان کیا ۔ کہ زانی (زنا کرنے والا) شخص کے عمل کا قرض اس کے اہل خانہ یا اس کی اولاد میں سے کسی نہ کسی کو زنا کے ذریعے چکانا پڑتا ہے ۔ اس بادشاہ نے سوچا کیوں نہ اس بات کو آزما کے دیکھا جائے۔ اس کی ایک بیٹی حسن و جمال میں بہت بے مثال تھی ۔بادشاہ نے شہزادی کو بلا کر کہا کہ عام سادہ سےکپڑےپہن کر اکیلی بازار میں چلی جاؤ  اور اپنے چہرے کو کھلا رکهنا۔  وہاں پر جب پہنچو تو لوگ تمہارے ساتھ جو بھی معاملہ کریں وہ ہوبہو مجھے آکر بتانا۔

 شہزادی نے  والد کے کہنے پربازار کا چکر لگا نے چلی گئی۔تو اس دوران جوبھی غیر محرم شخص اس کی طرف دیکهتا وہ شرم و حیا سے نگاہیں نیچی کرلیتا ۔کسی شخص کا   بھی شہزادی کے حسن و جمال کی طرف دھیان ہی نہیں گیا ۔ البتہ جب شہزادی پورے شہر کا چکر لگا کر واپس اپنے محل میں داخل ہو ئیں۔ تو راہداری میں ایک ملازم نے محل کی خادمہ سمجھ کر روک لیا اور نازیبہ حرکت کرنےکے بعد بھاگ گیا۔

شہزادی جونہی بادشاہ کے پاس پہنچی تو سارا واقعہ سنایا ۔تو بادشاہ کی آنکھوں میں آنسو آ گئے اور کہنے لگا کہ میں نے تمام عمر کسی  غیر محرم عورت طرف نگاہ اٹھاکر نہیںدیکھا۔ تاہم ایک مرتبہ مجھ سے غلطی ہوئی اور وہ یہ کہ ایک نا محرم لڑکی سے کچھ نازیبہ حرکت کر بیٹھا  ۔آج میرے ساتھ بھی وہی ہوا جو کچھ میں نے کبھی اپنے ہاتھوں سے کیا تھا۔

سچ کہتے ہیں کہ : زنا ایک قصاص والا عمل ہے جس کا بدلہ زنا سے ہی ادا ہوکر رہتا ہے

(تفسیر روح المعانی)


Islamic Story in Urdu #3 | ۳  اسلامی واقع نمبر

 :زنا کے متعلق حضرت امام شا فعی رحمتہ اللہ علیہ

حضرت امام شا فعی رحمتہ اللہ علیہ فرماتے ہیں ” تم پاک دامن رہو گے توتمہاری عورتیں  بھی پاک دامن رہیں گی “۔کیونکہ اس میں کوئی  شک نہیں کہ زنا ایک قرض ہے۔   اگر تم نے زنا کیا تو ادائیگی بھی تمہارے گھر والوں سے  یعنی ماں ، بہن بیوی یا بیٹی سے ہوگی۔

اے ابن آدم :اگر تجھ میں عقل ہے تو اسکو سمجھ ،پس جو زنا کرےگا وہ اسے اپنے گھر کی طرف راستہ دےگا۔

 (انور رضا صفحہ 3910)


Islamic Story in Urdu #4 | ۴  اسلامی واقع نمبر

نوجوانوں کیلئے سبق آموز واقعہ

بنی اسرائیل میں ایک قصاب اپنی پڑوس کی ایک کنیز پر عاشق ہوگیا۔ ایک دن اتفاق سے کنیز کو اس کے مالک نے دوسرے گاؤں کسی ضروری کام سے روانا کیا۔ قصاب نے  موقع کو غنیمت جانا اور کنیز کے پیچھے ہولیا۔ جب کنیز جنگل سے گزر رہی تھی تو قصاب نے سامنے آکر اسے پکڑ لیا۔  اور اسے زنا  کرنےپر آمادہ کرنے کی کوشش کرنے لگا۔

جب کنیز نے اس قصاب کی زنا کی نیت دیکھی تو اسےکہا

اے نوجوان ،  حقیقت  کو پہچان اور اس زنا کے گناہ میں نہ پڑ ۔اور میں تجھے یقین دلاتی ہوں کہ جتنا تُو مجھ سے محبت کرتا ہے اس سے کہیں زیادہ میں تیری محبت میں گرفتار ہوں ۔لیکن اس گناہ کے اِرتکاب سے مجھے اپنے مالک حقیقی عزوجل کا خوف روک رہا ہے۔

اس نیک سیرت اور خدا عزوجل کا خوف رکھنے والی کنیز کی زبان سے نکلنے والے ان  الفاظ نےقصاب کے دل  پر بہت اثر کیا۔اور اس نے کہا

جب تُو اپنے پاک پروردگار عزوجل سے اِس قدر ڈر رہی ہے تو میں اللہ عزوجل سے کیوں  کرنہ ڈروں ؟ میں بھی تو اسی اللہ عزوجل کا بندہ ہوں ، جا۔۔تو بے خوف و خطر ہو کر چلی جا۔

اتنا کہنے کے بعد اس قصاب نے اپنے گناہوں  سے سچی توبہ کی اور واپس اپنے گھر کی طرف چل پڑا ۔

دوران سفر اسے شدید پیاس محسوس ہوئی ۔لیکن دور دور تک اس ویران جنگل میں پانی کا کہیں کوئی نام ونشان  تک نہ تھا۔ قریب تھا کہ گرمی  و پیاس کی شدت سے اس کا دم نکل جائے گا۔ اتنے میں اسے ایک قاصد ملا اس زمانے کے نبی کا ۔ جونہی اس کی نظر قصاب کی حالت پر پڑی تو پوچھا:

اے ابن آدم ،تجھے کیا پریشانی ہے؟

قصاب نے کہا: میں شدید پیاسہ ہوں۔

یہ سن کر قاصدبولا: ہم دونوں مل کر اللہ عزوجل سےدعا کرتے ہیں کہ ہم پر اپنی رحمت کے بادل بھیجے اور ہمیں سیراب کرے، یہاں تک کہ ہم اپنی بستی میں جا پہنچیں۔

جب قصاب نے یہ سنا تو کہنے لگا۔

میرے پاس تو ایسا کوئی نیک عمل بھی نہیں ہے کہ جسےوسیلہ بناکر دعا کی جائے۔ آپ  ایک نیک شخص ہیں آپ دعا کریں ۔

:اس قاصد نے کہا

چلوٹھیک ہے تم آمین کہنا ،میں دعا مانگتا ہوں۔

قاصد نے دعا مانگنا شروع کی اور وہ قصاب ساتھ ساتھ آمین کہتا رہا۔تھوڑی ہی دیر میں اچانک ایک بادل کے ٹکڑے نے ان دونوں کو ڈھانپ لیا اور ان پر سایہ فگن ہوکر ان کے ساتھ چلتا رہا۔

جب وہ دونوں اپنی بستی میں پہنچ چکےتو قصاب اپنے گھر کی طرف روانہ ہوا اور وہ قاصد اپنی منزل کی جانب گامزن ہوا۔

جیسے ہی قصاب  گھر کیلئےچلا بادل بھی اس کے ساتھ ساتھ رہا ۔جب اس قاصد نے یہ معاملہ دیکھا توقصاب کو آوز لگائی اور کہنے لگا:

تم نے  تودعا کرنے سے اِنکار کیا تھا کہ تمہارے پاس کوئی نیکی نہیں ۔ پھر دعا میں نے کی اور آمین تم کہتے رہے ۔لیکن حال اب یہ ہے کہ بادل  تو تمہارے ساتھ ہو لیا ہے اور تمہارے سر پر سایہ فگن ہے۔ سچ سچ بتاؤ ایسی کون سی عظیم نیکی تم نے کی ہے ،جس کی وجہ سے یہ خاص کرم تم پہ ہواہے؟

:یہ سن کر اپنا سارا واقعہ قصاب نے اسےسنایا۔یہ سننے کے بعد قاصد نے کہا

اللہ رب العزت کی بارگاہ میں گناہوں سے توبہ کرنے والوں کا جو مقام و مرتبہ ہے وہ اور کسی کا  نہیں۔

 

:حکایت سعدی رحمتہ اللہ علیہ

بے شک گناہ کا سرزد ہونا انسان ہونے کی دلیل ہے، مگر ان پر توبہ کر لینا مومن ہونے کی نشانی ہے۔

یہ بات یاد رکھیں ،ہم دوسروں کی ماں بہن بیٹی کے ساتھ اگر زنا کریں گے۔ تو وہ زنا ایک نہ ایک دن لوٹ کر ہماری طرف ضرور بالضرور آ ئے گا۔

ذرا نہیں پورا سوچیئے گا ضرور۔

:غور طلب بات

ہمیں مندرجہ بالا واقعات سے سبق لینا چاہئے۔تاکہ ایسا نہ ہو کہ ہماری کوتاہیوں کے بدلے پھر ہمارے گھر والے چکاتے  پھریں۔ جس شخص کی چاہت ہو کہ اس کے گھر کی خواتین پاکدامن  رہیں۔ تو اسے  بھی چاہئے کہ وہ غیر محرم عورتوں سے لاتعلق ہوجائے  ۔کیونکہ پاکدامنی کا بدلہ  بھی پاکدامنی کی ہی صورت میں ملتا ہے۔

اس پیغام کو صرف اپنے تک محدود نہ رکھیں ۔بلکہ دوسروں تک  بھی پہنچائیں اللہ عزوجل آپ کو اور مجھے  اس  گناہ کبیرہ سے محفوظ رکھے۔

 آمين یارب العالمین


4 best islamic stories in English | انگلش میں اسلامی واقعات

Islamic Story in English #1 

The reward of purity is also purity:

A story is narrated in Tafsir Ruhul Bayan that there was a famous shop of a goldsmith in the city of Bukhara. His wife was very kind and beautiful. A Saqqa (water fetcher) had been bringing water to his house for thirty years, who was also a very confident person.

One day, while filling the water, Saqqa grabbed goldsmith wife’s hand and left. Goldsmith’s wife was deeply saddened, because such a long period of trust had been damaged. Tears welled up in her eyes. Meanwhile, goldsmith came home to eat. He saw his wife crying. On asking, when his wife informed him about the situation, tears came to goldsmith’s eyes.

When asked by his wife, goldsmith said that a woman had come to the shop today to buy jewelery. As soon as I started giving her jewelry, I liked her beautiful hand very much. So I touch the hand of this non-mahram with lust which became a debt on me. So Saqqa touch your hand and paid off that debt. I now truly repent to you.

I will never do that again, but tell me, what does Saqqa do to you now?

The next day, when Saqqa came with water, he said to goldsmith’s wife, “I am very ashamed”. That yesterday I was deceived by the devil and did bad deeds. I have truly repented and I assure you I will never do that again.

It is not strange that as soon as goldsmith repented by touching a non-mahram. Then the non-mahram man also repented of touching his wife.

Goldsmith had only taken the hand of a non-mahram woman, so Allah Almighty immediately took account of her. See, this is the law of reward and action of Allah Almighty. Means, what goes around comes around, Allahu Akbar.

(Tafsir Ruhul Bayan)


Islamic Story in English #2

Adultery is an act of qisas, the reward of which is always paid:

Once upon a time, a scholar mentioned this issue to the king. That the debt of the act of the adulterer has to be paid by one of his family or his children. This king thought why not try this. One of his daughters was very unique in beauty. The king summoned the princess and told her to go to the market alone in simple clothes and keep her face open. When you get there, come and tell me whatever people do to you.

At the request of her father, the princess went around the market and left. During that time, any non-mahram person who looked at him would look down with shame and humiliation. No one paid any attention to the beauty of the princess. However, when the princess went around the city and returned to her palace. In the corridor, an employee stopped him thinking he was a maid of the palace and ran away after making a lewd move.

As soon as the princess reached the king, she told the whole story. Tears came to the king’s eyes and he said that he had never looked at a non-mahram woman all his life. However, once I made a mistake and that is that I did something awkward to a non-mahram girl. Today the same thing happened to me that I once did with my own hands.

Truth be told: Adultery is an act of qisas. The reward of which remains to be paid.

(Ruh al-Ma’ani)


Islamic Story in English #3

Hazrat Imam Shafi’i (may Allah have mercy on him) regarding adultery:

Hazrat Imam Shafi’i (may Allah have mercy on him) says, “You will be chaste, so will your women be chaste.” Because there is no doubt that adultery is a debt. If you have committed adultery, the payment will also be made from your family members ie mother, sister, wife or daughter.

O son of Adam, if you have intellect, understand it, so whoever commits adultery will give way to his home.

(Anwar Raza page 3910)


Islamic Story in English #4

Story with Lessons for young people:

In Israel, a butcher fell in love with a slave girl in his neighborhood. One day, by chance, the slave girl was sent by her owner to another village for some urgent work. The butcher seized the opportunity and followed the maid. As the maiden was passing through the forest, the butcher came forward and grabbed her. And tried to persuade her to commit adultery.

When the maid saw the bad intention of the butcher, she said to him:

Young man, know the truth and do not fall into this sin. And I assure you that I am more in love with you than you are with me. But the fear of my God Almighty is preventing me from committing this sin.

These words from the mouth of this virtuous and God-fearing maiden had a great effect on the heart of the butcher. And he said:

Why should I not fear Allah, the Exalted, when you fear Him so much? I too am a servant of Allah Almighty. So go without fear and danger. After saying this, the butcher truly repented of his sins and walked back to his home.

During the journey he felt very thirsty. But in the distance there was no sign of water in this desolate forest. He was about to die of heat and thirst. In so doing he found a messenger of the Prophet of that time. As soon as he saw the condition of the butcher, he asked:

Son of Adam, what is the matter with you?

The butcher said: I am very thirsty.

Upon hearing this, the messenger said: We both pray to Allah Almighty to send a cloud of His mercy upon us and to irrigate us until we reach our hometown. When the butcher heard this, he began to say. I don’t even have a good deed that can be used as a means to pray. You are a good person, so pray.

The messenger said:

All right, you say Amen, I pray.

The messenger began to pray and the butcher continued to say Amen at the same time. Shortly after, a piece of cloud suddenly covered them both and cast a shadow over them and walked with them. When they both reached their hometown, the butcher left for his home and the messenger walked towards his destination. As soon as the butcher went to the house, the cloud stayed with him. When the messenger saw this matter, he called out to the butcher and said:

You refused to pray that you have no good. Then I prayed and you kept saying Amen. But now the cloud is with you and there is a shadow on your head. Tell me the truth, what great good have you done, because of which this special grace has befallen you?

On hearing this, the butcher told him his whole story. Upon hearing this, the messenger said:

 

Sheikh Saadi Quote:

The position of those who repent of their sins is very high in the sight of Allah, the Lord of Glory.
Of course, committing sins is proof of being human, but repenting of them is a sign of being a believer.

(The story of Saadi (may Allah have mercy on him)

Remember, we will do it with the mother, sister and daughter of others. He will definitely come back to us one day or another.

Things to consider:

We should learn from the above stories. So that our family members do not pay for our shortcomings. Whoever wants the women of his house to be chaste. So he should also become indifferent to non-mahram women. Because chastity is rewarded only in the form of chastity.

Don’t limit this message only to yourself, but also to others. May Allah Almighty protect you and me from this great sin.

Amen, Lord of the Worlds


Related Headings:

Islamic story about adultery with morals and lessons. Urdu islamic story for muslim and non muslim. English moral story for kids and young. Latest best islamic story and articles for reading and sharing on fb, facebook, twitter, whatsapp, pinterest etc. Islami stories with morals for men and women. Best english and urdu post for young generation. Best advices for new generation in the form of stories.

Show More

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button