Articles and Posts in UrduIslamic Posts and ArticlesPosts and Articles

Khawaja ghulam fareed aur majzoob ka waqia | خواجہ غلام فریداورمجذوب کاواقعہ

Best Islami waqiat in urdu | بہترین اسلامی واقعات اردو میں پڑھیں

Today we are sharing a short islamic story about Khawaja ghulam fareed and a majzoob. Khawaja ghulam fareed aur majzoob ka waqia urdu main. Read a short story of Khawaja ghulam fareed and a majzoob in urdu texts and fonts. A beautiful islamic waqia in urdu about Khawaja ghulam fareed and a majzoob.


Urdu Main Parhainاردو میں پڑھیں


 حضرت خواجہ غلام فرید رحمتہ اللہ علیہ اور ایک  مجذوب کا واقعہ

:کوٹ مٹھن شریف  کے شہر میں ایک مجذوب ہوا کرتاتھا ۔ جو ہر  آتے جاتے سے ایک ہی سوال پوچھتا رہتا  تھا کہ

عید کدَاں یعنی عید کب ہو گی۔

اکثر لوگ اس مجذوب کی بات کو توجہ نہ دیتے اور  اَن سُنی کر دیتے ۔ اور کچھ لوگ ان سنی کر کے گزر جاتے اور کچھ سُن کر مذاق اُڑاتے۔

: ایک دن اس جگہ سے حضرت خواجہ غلام فرید رحمتہ اللہ علیہ گزرے تو  مجذوب نے اپنا وہی سوال دہرایا

عید کِداں یعنی عید کب ہو گی۔

:آپ رحمتہ اللہ علیہ صاحبِ حال بزرگ تھے۔  اُس کا سوال سُن کر مسکرائے    اور کہا

یار ملے جَداں یعنی جب محبوب ملے  وھی دن عید کا دن ہو گا۔

 یہ الفاظ سُنتے ہی ۔ وہ مزید ترستی آنکھوں سے گُویا ہوا سرکار مجذوب کی  آنکھُوں  سے مُوتیُوں کی طرح آنسُوں جاری ہو گے

Khawaja ghulam fareed aur majzoob ka waqia in urdu 2020 - خواجہ غلام فریداورمجذوب کاواقعہ
Image by PostsParking.Com

یار ملے کِداں مطلب  محبوب کس طرح   ملیگا۔

:حضرت خواجہ غلام ِفرید (رحمتہ اللہ علیہ )نے فرمایا

 میں مرِے جداں  یعنی جب انسان کی” میں ” مرے  گی۔

بس یہ فرمانا تھا  کہ آپ رحمتہ اللہ علیہ کہ۔

 :تو اس مجذوب نے کپکپاتے وتھرتھراتے ہوئےعرض کیا حضور

میں مرےِ کدَاں یعنی میں کب مرے گی۔

سرکار  رحمتہ اللہ علیہ  مسکرائےاور اُسے پیار سے تھپکی دیتے یہ کہتے چل دیے۔

یار تَکے جَداں یعنی جب محبوب دیکھے گا۔

:واصف علی واصف رحمتہ اللہ علیہ فرماتے ہیں

محبوب کا دیدار عاشق کی عید ہے۔  اور دُنیا میں یہ دیدار اُسے دو مرتبہ ملتا ہے۔

 پہلی بار  تب جب اُس کی ” میں ” مرتی ہے ۔ اور دوسری بار تب  جب وہ خود مرجاتا ہے۔

یہی وجہ ہے اولیاء اللہ کی برسی نہیں ” عرس” منایا جاتا ہے۔   یعنی خوشی کا دن  کیونکہ ان کی موت محبوب سے ملاقات ہوتی ہے۔

 

کوچہ محبوب میں جو جو پہنچ کر مرگئے

ان کو آغوش مدفن ہوگیا عنایت علی

 


Hazrat khwaja ghulam fareed (rehmat ul llah alaihe) aur aik majzoob ka waqia in urdu

Islami waqia in roman urdu texts:

Kot mithan shareef kay shehar mein aik majzoob huwa karta tha. Jo har atay jatay se aik hi sawal puchta rehta tha ke.

Eid kadaan yani eid kab ho gi.

Aksar log is majzoob ki baat ko tawajah nahi detey aur ann suni  kar dete. Aur kuch log un suni kar ke guzar jatay aur kuch sun kar mazaaq uratye.

Aik din uss jagah se hazrat khwaja ghulam fareed (rehmat ul llah alaihe) guzray tou majzoob ne apna wohi sawal dauhraya.

An Arial view Darbar Hazrat Khawaja Ghulam Fareed (RA) at Mithan kot. It was a famous Muslim saint, poet and noble man of his time.
Image From Pinterest

Eid kadaan yani eid kab ho gi.

Aap (rehmat ul llah alaihe) sahib haal buzurag thay. Uss ka sawal sun kar muskuraye aur kaha:

Yaar miley jaddaan yani jab mehboob miley. Wohi din eid ka din ho ga.

Yeh alfaaz suntay he. Majzoob ke ankhoon say motiyon ki tarha ansoo jari ho gae. Woh mazeed tarasti aankhon se Goya huwa sarkar:

Yaar miley kiddaan matlab mehboob kis taraha milay ga.

Hazrat khwaja ghulam fareed (rehmat ul llah alaihe) ne farmaya:

Main marey jaddaan matlab jab insaan ki “mein” marey gi.

Bas yeh farmana tha  ke Aap (rehmat ul llah alaihe) ka. Tou uss majzoob ne kapp kappate aur tharr tharratay hue arz kya huzoor:

Mein marey Kaddaan yani mein kab marey gi.

Sarkaar (rehmat ul llah alaihe) muskuraye. Aur ussay pyar se thapki dete yeh kehtay chal diye:

Yaar takkay jaddaan yani jab mehboob dekhey ga.

Wasif Ali wasif(rehmat ul llah alaihe) farmatay hain:

Mehboob ka deedar aashiq ki eid hai.  Aur duniya mein yeh deedar ussay do martaba milta hai. Pehli baar tab jab uss ki “mein” marti hai. Aur doosri baar tab jab woh khud mrjata hai.

Yahi wajah hai auliya Allah ki barsi nahi “Uras ” manaya jata hai. Yani khushi ka din kyunkay un ki mout mehboob se mulaqaat hoti hai.

Koocha mehboob mein jo jo pahonch kar marr gaye

Unn ko aghosh e madfan hogaya. Inayat Ali

 


Read More at PostsParking:

Read articles posts and waqiat in urdu, english and roman texts and fonts. We have urdu posts for reading and sharing on fb, facebook, whatsapp, twitter and all social media. Here you can easily share our urdu articles posts with just selecting texts with mouse.

Show More

Related Articles

One Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button